Ehd-e-Wafa

عہد وفا سپر ہٹ ڈرامہ ہے جو ہم ٹی وی اور پی ٹی وی ہوم 2019-20 پر نشر ہوا۔ڈرامے کی کہانی   چار دوستوں کی    خوبصورت دوستی پر مبنی ہے  جس میں یہ چار دوست ایک دوسرے پر اپنی جان چھڑکتے ہیں  ایک دوسرے لئے ہر حد تک جا سکتے ہیں ۔اس ڈرامے میں چار اہم کردار ادا کرنے والوں کے نام  احد رضا میر جو  سعد کا کردار ادا کر رہے ہیں جو ایک فوجی کا بیٹا ہوتا ہے ،علیزے شاہ دعا کا کردار ادا کر رہیں جس کی سعد سے شادی ہوتی ہے اور اس لڑکی کی وجہ سے چار دوستوں میں  کچھ وقت کے لئے دوریاں بھی پیدا  ہوتی ہیں  ،عثمان خالد بٹ  شاہ زین کا کردار ا دا کر رہا ہے جو ایک زمیندار کا بیٹا ہوتا ہے اس ڈرامے میں  زارا نور عباس  رانی  کا کردار ادا کر رہی ہیں جو ایک زمیندار کی بیٹی ہوتی ہے اور  اس کی شادی شاہ زین سے ہوتی ہے۔احمد علی جو شہریار کا کردار ادا کر رہا ہے ایک غریب باپ کا بیٹا ہوتا ہے  اس کے بعد  وہاج علی جو شارک کا کردار ادا کرتا ہے وہ بھی مڈل کلاس فیملی سے تعلق رکھتا ہے۔

یہ چار دوست ایسے ہیں کہ یہ اپنی زندگی کو سنجیدہ نہیں سمجھتے  بلکہ اپنی زندگی کا ہر لمحہ انجوائے کرنا چاہتے ہیں   جہاں اس ڈرامے میں ہنسی مزاخ  ہے وہاں رلانے والے   مناظر بھی ہیں ۔ شروع میں جتنی محبت  کرتے ہیں ایک دوسرے سے اتنی ہی بعد نفرت کرتے ہیں   ۔چاروں دوست ایک ہی کالج میں پڑھتے ہیں اور ہمیشہ اپنی شرارتوں کی وجہ سے پکڑے  جاتے ہیں  ۔سعد ا ور دعا کی پیار کی کہانی بھی تب شروع ہوتی ہے جب یہ کالج میں پڑھتے ہیں  سعد اپنے دوستوں کو بتاتا ہے کہ یو وہ ہی لڑکی ہے جن کی تصویریں بناتا ہے ،سعد کیوں کہ شرمیلا لڑکا ہوتا ہے اس لئے ان کے دوست کوشش کرتے ہیں کہ سعد کی دعا سے ملاقات کروائیں  ایک دن کوشش کر کے ملتے  ہیں وہاں دعا کا کزن آجا تا ہے وہ لڑائی ہوتی ہے اور پولیس آجاتی ہے اوردعا کے کزن اور سعد کو جیل میں بند کر دیتی ہے سعد کے تینوں دوست بھاگنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں لیکن ان کو اپنے کیے ہر شرمندگی ہوتی ہے کہ ہم کیوں بھاگ آئے ادھر سعد نہیں بتاتا کہ وہ کون ہے کس کا بیٹا ہے  ادھر اس کے دوست سوچتے ہیں کہ  ہم تھانے جائیں کہ   نہیں  ۔سعد ان کو اپنی ہاسٹل کا با دیتا ہے وہاں وارڈن آکر اس تھانے سے چھڑا کر لے جا تا ہے  ۔کالج والے  ان سب کے والدین کو کالج بلا تے ہیں  دعا کے گھر والے بھ کالج آکر پرنسپل کو شکایت لگاتے ہیں  وار ان لڑکوں کو سزا کا مطالبہ کرے ہیں پرنسپل ان کو یقین دلاتا ہے کہ ان کو ضرور سزا ہوگی۔

سعد کا والد  جو خود آرمی افسر ہوتا ہے وہ سعد سے ملنے آتا  ہے کہ میں یہاں تمہیں سزا دینے نہیں آیا تمہیں بتانے آیا ہوں کہ  میں تم سے بات کرنے آیا ہوں  اوپر میری طرف دیکھو  سر مت جھکاؤ ۔تمہارہی بہن بڑی ہوگئی ہے اب وہ اپنی دوستوں کے ساتھ باہر جاتی ہے اور اگر اس کو کوئی چھیڑے تو تم کیا کرو گے؟کسی دوسرے کی بیٹی  کا سر بازار تماشہ بنانے والے کی اتنی جرات ہوگی کہ وہ اپنی بہن  کی طرف اٹھنے والی نظروں کو جھکا سکے ؟تمہاری بہن تو باہر سر اٹھا کر چلتی ہے کہ اس کے پیچھے اس کا بھائی کھڑا ہے لیکن اس کو کیا پتا کہ اس کا بھائی کتنا چھوٹا ہو گیا ہے۔ادھر باقی دوستوں کے والدین کو بتایا جاتا  ہے کہ ان تینوں  کو کالج سے نکالنے کا فیصلہ کیا گیا ہے  لیکن شارک لڑائی میں موجود نہیں تھا اس لئے اس کو  نہیں نکالا گیا۔شہریار شارک کو کہتا  ہے تمہارے دوست یہاں سے نکالے گئے ہیں اور تم یہاں آرام سو رہو گےاٹھو اور دوستی کا حق ادا کرو۔ شارک اپنی غریبی کا بتاتا ہے اور کہتا ہے میں نہیں جا سکتا۔شاہ زین اور شہریار مان جاتے ہیں  اتنے مین سعد بھی آجاتا ہے اور شاہزین اس سے معافی مانگتا ہے کہ ہمیں وہاں سے بھاگنا نہیں چاہیے تھا ۔اس کے بعد بحث ہوتی ہے اور سعد شاہ زین کو تھپڑ مارتا ہے  اور سب جدا ہو جاتے ہیں ۔آگے کیا ہوتا ہے مزید کہانی کے لئے دیکھیے ڈرامہ

 

Ehd e  Wafa is a super hit drama that aired on Hum TV and PTV Home 2019-20. The story of the drama is based on the beautiful friendship of four friends in which these four friends spray their lives on each other for each other. The names of the four main characters in this play are Ahad Raza Mir who is playing the role of Saad who is the son of a soldier, Aliza Shah is playing the role of Dua who is married to Saad. And because of this girl, the four friends also create distances for some time. Usman Khalid Butt is playing the role of Shah Zain who is the son of a landlord in this play. Zara Noor Abbas is playing the role of Rani who is the daughter of a landlord and is married to Shah Zain. Ahmed Ali who is playing the role of Shehryar is the son of a poor father followed by Wahaj Ali who Played the role of a shark, he also belongs to a middle class family.

These four friends are such that they do not take their life seriously but want to enjoy every moment of their life. Where there is laughter in this drama, there are also weeping scenes. They hate each other as much as they love each other in the beginning. The four friends study in the same college and are always caught because of their mischief. The love story of Saad and Dua also starts when it Saad tells his friends in college that he is the only girl he makes pictures of. Saad is a shy boy so his friends try to get him to meet Saad's prayers. Dua's cousin comes there, there is a fight and the police come and lock Dua's cousin and Saad in jail. Saad's three friends run away. They succeed, but they are ashamed of what they did. Why did we run away? Saad doesn't tell us who he is. Whose son is he? His friends think we should go to the police station or not. Saad tells him about his hostel. The warden comes there and takes him away from the police station. The people of the college call the parents of all of them to the college. The people of the house of prayer also come to the college and complain to the principal. The principal demands punishment for these boys. Assures them that they will be punished.

Saad's father who is an army officer himself comes to meet Saad that I have not come here to punish you I have come to tell you that I have come to talk to you look up at me do not bow your head. Your sister has grown up now she She goes out with her friends and what will you do if someone teases her? Someone else's daughter's head will be so daring that the spectator will be able to look down at her sister? Your sister is out She raises her head to see her brother standing behind her, but she doesn't know how small her brother has become. Meanwhile, the parents of the other friends. It is reported that it has been decided to expel the three from the college but the shark was not present in the fight so it was not expelled. Shehryar tells the shark that your friends have been expelled from here and you will sleep here. And pay the price of friendship. The shark tells of his poverty and says I can't go. Shah Zain and Shehryar agree that Saad also comes and Shahzeen apologizes to him that we should not have run away from there. Saad Shah Zain is slapped and everyone gets separated. For more story, watch the drama.

Cast

Ahad Raza Mir

Ahmed Ali

Vaneezah Ahmed

Osman Khalid Butt

Zara Noor Abbas

Alizay Shah

Wahaj Ali

Faraz Yahya

Inam Siddiqui

Khalifa Sajeer Uddin

Syed Muhammad Ahmed

Mian Wassam Waheed

Ejaz Ahmed Niazi

Agha Muhammad Ali

Azeem Sajjad

Adnan Samad Khan

Naeema Naeem Butt

Anjum Habibi

Directed by  Muhammad Saife Hasan

Contact Us
Socialize with Us
  • Facebook
  • YouTube
2020@dramaspakistan.com all rights reserved